Article

ضیا سرحدی کی وفات

ضیا سرحدی 27 جنوری 1997ء کو پاکستان کے ممتاز فلم ساز اور ہدایت کار ضیا سرحدی اسپین کے شہر میڈرڈ میں وفات پاگئے۔ ضیا سرحدی 1912ء میں پشاور میں پیدا ہوئے تھے۔ گریجویشن کرنے کے بعد 1933ء میں وہ بمبئی چلے گئے جہاں انہوں نے معروف ہدایت کار محبوب کے ادارے میں کہانی نگار کی حیثیت سے فلمی زندگی کا آغاز کیا۔ ان کی اس زمانے کی فلموں میں دکن کوئن،من موہن، جاگیردار، مدھر ملن، پوسٹ مین، بھولے بھالے اور شیو راج کے نام شامل ہیں۔ 1947ء میں فلم نادان سے ان کی ہدایت کاری کے دور کا آغاز ہوا۔ بطور ہدایت کاران کی کامیاب فلموں میں انوکھی ادا، ہم لوگ، فٹ پاتھ اور آواز کے نام سرفہرست تھے۔ 1958ء میں وہ پاکستان آگئے جہاں انہوں نے رہ گزر کے نام سے ایک فلم بنائی تاہم یہ فلم کامیاب نہ ہوسکی۔ پاکستان میں انہوں نے لاکھوں میں ایک ، غنڈہ، حبہ خاتون اور نیا سورج نامی فلموں کی کہانیاں تحریر کیں جن میں سے آخر الذکر دو فلمیں بوجوہ مکمل نہ ہوسکی۔ اس کے بعد وہ اسپین منتقل ہوگئے اور اپنی وفات تک وہیں قیام پذیر رہے۔ ٹیلی وژن کے مشہور فنکار خیام سرحدی ان کے فرزند ہیں جبکہ معروف موسیقار رفیق غزنوی ان کے داماد تھے۔ وہ پشاور میں آسودۂ خاک ہیں۔

Share information
61 views

Leave a reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

cool good eh love2 cute confused notgood numb disgusting fail